آصف ہاشمی اور 50

آصف ہاشمی اور دیگر کےخلاف کروڑوں روپے کی ناجائز سرمایہ کاری کیس کی سماعت 29اپریل تک ملتوی

لاہور ( این این آئی) ایف آئی اے عدالت نے آصف ہاشمی اور دیگر کے خلاف کروڑوں روپے کی ناجائز سرمایہ کاری کیس کی سماعت 29اپریل تک ملتوی کر دی ۔سپیشل سینٹرل عدالت کے جج محمد رفیق نے ایف آئی اے حکام سے رپورٹ طلب کر رکھی تھی ۔

متروکہ وقف املاک بورڈ کے سابق چیئرمین آصف ہاشمی کے علاقہ سابق سیکرٹری امین خان وزیر، سابق وائس چیئرمین چوہدری محمد علی اور سابق چیف اکاﺅنٹس آفیسر چوہدری اکرم بھی عدالت میں پیش ہوئے ۔تینوں ملزموں کی جانب سے 265 کے تحت بریت کی درخواست دائر کر دی گئی،
عدالت نے بریت کی درخواست پر 29 اپریل کو وکلاءکو بحث کے لئے طلب کر لیا۔مقدمے میں سرکاری وکیل کی جانب سے ریکارڈ پیش نہیں کیا گیا۔

عدالت نے ملزم آصف ہاشمی کو ہتھکڑیاں نہ لگانے کی درخواست عدالتی حکم پر عملدرآمد ہونے کی بنا ءپر نمٹا دی ۔ایف آئی اے حکام کے مطابق آصف ہاشمی نے بطور چیئرمین متروکہ وقف املاک بورڈ ایز گارڈ نائن اور ایگریٹک کمپنی میں مالی انویسٹمنٹ کی جس سے مالی خسارہ اٹھانا پڑا، سابق چیئرمین متروکہ وقف املاک بورڈ کی ملی بھگت سےمیسرز ہائی لنک میں 1870 ملین کی غیر قانونی انویسٹمنٹ کی گئی، ملزم آصف ہاشمی کی 2009 سے 2012 کے درمیان بطور چیئرمین انویسٹمنٹ کمیٹی غیرقانونی طور پر مالی انویسٹمنٹ کی منظوری ہو ئی، ملزم کیجانب سے بطور چئیرمین متروکہ وقف املاک تمام منٹس آف میٹنگ سائن کیے گئے اور خطیر رقم کی منتقلی ہوئی، ملزم آصف ہاشمی کے اس سرمایہ کاری سے حکومتی خزانے کو 1870 ملین کا نقصان پہنچا، ملزم کیجانب سے نجی کمپنی کو ناجائزمالی فائدہ پہنچانے کے شواہد ملے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں