انگلینڈ کے خلاف کھیلنے والی ٹیم ہی ورلڈ کپ کھیلے گی: سرفراز احمد

کراچی :پاکستان کرکٹ ٹیم انتظامیہ ورلڈ کپ سے قبل سنیئرز کو آرام دے کر کچھ نئے کھلاڑیوں کو آزمانا چاہتی ہے تاکہ ورلڈ کپ کے لیے ٹیم کو حتمی شکل دی جا سکے۔اس موقع پر اگر کوئی نیا کھلاڑی کلک کر گیا تو اسے ورلڈ کپ کا ٹکٹ مل سکتا ہے۔قومی کپتان سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ جو لڑکے ہمارے ورلڈ کپ پلان میں ہیں انہیں آئندہ ماہ آسٹریلیا کے خلاف ہوم سیریز میں کچھ نئے لڑکوں کے ساتھ موقع دیا جائے گا اور بعض سنیئرز کو آرام دیا جاسکتا ہے۔ورلڈ کپ سے قبل انگلینڈ کی سیریز میں جس ٹیم کا انتخاب ہوگا وہی ٹیم ورلڈ کپ کھیلے گی۔ ورلڈ کپ کے 16کھلاڑی ہی انگلینڈ کے خلاف پانچ ون ڈے میچوں میں شرکت کریں گے۔ہوسکتا ہے کہ کچھ نئے کھلاڑی ورلڈ کپ پلان میں شامل ہو جائیں لیکن اس بات کا انحصار آسٹریلیا کی سیریز میں ٹیم کی کارکردگی پر ہوگا۔کراچی میں نجی ٹی وی کو خصوصی انٹر ویو دیتے ہوئے سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ٹیم انتظامیہ اور سلیکشن کمیٹی میں ورلڈ کپ پلان پر بات ہو چکی ہے، ہم نے ورلڈ کپ کے لیے 15 سے 20 کھلاڑیوں کا ایک پول تیار کیا ہوا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ یہی وہ کھلاڑی ہیں جو ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی میچوں میں شرکت کر رہے ہیں تاہم پاکستان اے کے ٹاپ پرفارمرز کو آسٹریلیا کی سیریز میں کھلا کر ورلڈ کپ کے پلان کو حتمی شکل دینا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستانی ٹیم میں کئی با صلاحیت اور میچ ونر کھلاڑی ہیں لیکن ان میں فنشنگ ٹچ کی کمی ہے، فائن ٹوئننگ کے بعد کھلاڑیوں کو سمجھائیں گے کہ وہ میچ فنش کرنے کی عادت ڈالیں، اس وقت کھلاڑیوں کو شائقین کی جانب سے سپورٹ کی ضرورت ہے۔ایک دن پہلے پاکستان کرکٹ بورڈ نے وکٹ کیپر بیٹسمین سرفراز احمد پر مکمل اعتماد ظاہر کرتے ہوئے انہیں رواں سال انگلینڈ میں ہونے والے عالمی کپ تک کے لیے کپتان مقرر کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔احسان مانی کا کہنا ہے کہ سرفراز احمد کی صلاحیتوں پر کسی قسم کا شک و شبہ نہیں ہونا چاہیے، وہ پہلے بھی ہمارے کپتان تھے اور رہیں گے۔سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ پاکستانی کرکٹ ٹیم 23 اپریل کو انگلینڈ جائے گی اور ون ڈے سیریز سے تین ہفتے قبل انگلینڈ پہنچے گی۔قومی ٹیم کے کپتان نے کہا کہ انگلینڈ کی ون ڈے سیریز میں جو ٹیم کھیلے گی تقریبا وہی ٹیم ورلڈ کپ میں پاکستانی ٹیم کی نمائندگی کرے گی۔انہوں نے کہا کہ امید ہے کہ پاکستان ٹیم ورلڈ کپ میں اچھی کارکردگی دکھائی گی اور ٹاپ پوزیشن پر فنش کرے گی۔دنیا کی تمام ٹیمیں بھرپور تیاری کے ساتھ ورلڈ کپ میں شریک ہو رہی ہیں، ہر کوئی اپنی ٹیم کو سپورٹ کررہا ہے۔پاکستانی لوگ بھی کرکٹ اور کرکٹرز سے محبت کرتے ہیں اور کرکٹرز اپنی قوم کو مایوس نہیں کریں گے۔اپنی کارکردگی کے حوالےسے سرفراز احمد نے کہا کہ کوشش کروں گا کہ ورلڈ کپ میں پانچویں یا چھٹے نمبر پر آﺅں، اپنی کارکردگی کے ذریعے ٹیم کوفرنٹ سے لیڈ کرنا چاہتا ہوں۔انہوں نے کہا کہ میں کسی وکٹ کیپر کی راہ میں رکاوٹ نہیں بنا ہوں، جب سے پاکستان ٹیم میں شامل ہوا ہوں میرے ساتھ کوئی نہ کوئی وکٹ کیپر ٹیم میں رہا ہے، میں نے کبھی کسی وکٹ کیپر کی حوصلہ شکنی نہیں کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں