ریاضت 43

بیٹیوں اور دامادوں کے ساتھ مل کر آج بھی ریاضت کرتی ہوں ‘ گلوکارہ عذرا جہاں

لاہور( این این آئی) نامور گلوکارہ عذرا جہاں نے کہا ہے کہ آج بھی ریاضت کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہوں ،میڈم نور جہاں سے گہری وابستگی تھی اور انہیںمیرے ہاتھ کا کھانا بہت پسند تھا۔ ایک انٹر ویو میں انہوں نے کہا کہ میرا یہ ماننا ہے کہ اگر کسی گلوکار نے ریاضت کا سلسلہ ترک کر دیا تو وہ گا نہیں سکتا ۔

میں آج بھی اپنی بیٹیوں اور دامادوں کے ساتھ مل کر ایک سے تین گھنٹے تک ریاضت کرتی ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ صائمہ جہاں میری سب سے ہونہار بیٹی ہے جو اس فن کے رموز کو بہتر طریقے سے سمجھتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پنجابی فلموں کی تعداد کم ہونے کی وجہ سے نئے گلوکار بھی سامنے نہیں آرہے جس کی وجہ سے میوزک انڈسٹری کو وہ نیا ٹیلنٹ نہیں مل رہا جو ماضی میں میسر تھا۔ انہوں نے کہا کہ میڈیم نور جہاں سے میری گہری وابستگی تھی اور وہ میرے ہاتھ کا بنایا ہوا کھانا بہت پسند کرتی تھیں ۔ا کثر گھر پر فون کر کے پوچھتی تھیںکیا پکایا ہے اور ڈرائیور کو بھجوا کر منگوا لیا کرتی تھیں ۔ میڈم نور جہاں جیسی گلوکارہ صدیوں میں پیدا ہوتی ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں