کنفرم کردیا

سپریم کورٹ نے غلام حیدر جمالی کی ضمانت قبل از گرفتاری کو کنفرم کردیا

اسلام آباد (این این آئی)سپریم کورٹ آف پاکستان نے سابق آئی جی غلام حیدر جمالی کی ضمانت قبل از گرفتاری کو کنفرم کردیا۔ بدھ کو سپریم کورٹ میں سابق آ ئی جی سندھ غلام حیدر جمالی کی ضمانت قبل از گرفتاری کی سماعت جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے کی ۔ دور ان سماعت عدالت نے غلام حیدر جمالی کی ضمانت قبل از گرفتاری کو کنفرم کردیا ،ٹرائل کورٹ کی جانب جاری کئے گئے وارنٹ گرفتاری ختم کردیئے۔ عدالت نے کہاکہ ٹرائل نے ہائیکورٹ کے حکم کے تناظر میں وارنٹ گرفتاری جاری کئے تھے ۔

سپریم کورٹ نے کہاکہ ٹرائل کورٹ قانون کے مطابق مناسب حکم دے سکتی ہے ۔ وکیل سر دار لطیف کھوسہ نے کہاکہ کانسٹیبلز کی بھرتیوں سے آ ئی جی کا براہ راست تعلق نہیں ہوتا ،بھرتیوں سے متعلق غلام حیدر جمالی نے براہ راست کوئی حکم جاری نہیں کیا۔ وکیل نیب نے کہاکہ نیب اپنی تحقیقات مکمل کر چکی،نیب نے غلام حیدر جمالی سے متعلق ریفرنس بھی دائر کردیا ہے۔وکیل نیب نے کہاکہ احتساب عدالت میں ریفرنس کی سماعت جاری ہے۔وکیل نیب نے کہاکہ آئندہ چند ماہ میں سماعت مکمل ہو جاے گی،نیب کو اس مرحلے پر غلام حیدر جمالی کی گرفتاری کی ضرورت نہیں۔ جسٹس یحییٰ آفریدی نے کہاکہ نیب کے کہنے کے بعد عدالت کے حکم کی ضرورت نہیں،کیس اب احتساب عدالت میں ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں