شہباز شریف کی 2

نیب نے شہباز شریف کی اہلیہ ،بیٹیوں کو طلبی کے نوٹسز منسوخ کر کے مبینہ منی لانڈرنگ کیس میں سوالنامہ بھجوا دیا

لاہور ( این این آئی) قومی احتساب بیورو (نیب ) نے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف و پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر محمد شہباز شریف کی اہلیہ اور بیٹیوں کو مبینہ منی لانڈرنگ کیس میں سوالنامہ بھجوا دیا۔

ذرائع کے مطابق نیب نے مبینہ منی لانڈرنگ کیس میں 17اپریل کو نصرت شہباز، 18اور 19کو جویریہ اور رابعہ کو طلب کیا تھا تاہم چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کی ہدایت پر طلبی کے نوٹسز منسوخ کر دیئے گئے اور بذریعہ ڈاک سوالنامہ بھجوایا گیا ہے۔نیب لاہور نے شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز اور بیٹیوں جویریہ علی اور رابعہ عمران کو گھر پر ہی سوالنامہ بھجوا دیا ہے۔

جس میں مبینہ منی لانڈرنگ اور بینکوں میں آنے والی رقوم کی تفصیلات پوچھی گئی ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سوالنامے میں تینوں سے 2008تا 2017تک کے ذرائع آمدن بارے پوچھا گیا ہے ، سوالناموں میں پوچھا گیا ہے کہ بتائیں کہ دیگرممالک سے آنےوالی آمدن کے ذرائع کیاہیں، کس کمپنی میں انکے کتنے شیئرزہیں اور انہیں کس کمپنی سے کتنا پیسہ آیا۔تحفے تحائف موصول ہونے سے متعلق بھی آگاہ کریں۔کس کمپنی یا ادارے سے کتنی تنخواہ وصول کرتی رہیں اس سے بھی آگاہ کیا جائے ۔

سوالنامے کے مطابق نصرت شہباز سے ماڈل ٹاﺅن اورڈونگاگلی کی رہائشگاہ کی خریداری کے ذرائع آمدن بارے پوچھا گیا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں