واہگہ بارڈر، پریڈ دیکھنے آنے والے پاکستانیوں کا جوش وجذبہ عروج پر

لاہور:
پاکستان اوربھارت کے مابین جہاں سرحدی کشیدگی انتہا پرہے وہیں لاہورکے واہگہ بارڈرپرجوش اورجذبوں کی جنگ بھی عروج پرہے۔
واہگہ بارڈرپرپریڈ دیکھنے آنے والے پاکستانیوں نے اپنے جوش اورجذبے سے ثابت کردیا کہ بھارتیوں دیکھ لوپاکستانی ڈرنے والے نہیں بلکہ بہادرقوم ہے۔ لاہورکے واہگہ اٹاری بارڈرپرویسے توہرروزجذبوں کی جنگ ہوتی ہے لیکن منگل کے روزبھارت کی طرف سے بالاکوٹ میں ائیراسٹرائیک کے دعوؤں کے بعد پاکستانیوں کی بڑی تعداد یہاں ہونے والے پاکستان رینجرزپنجاب اوربی ایس ایف انڈیا کے جوانوں کی پرید دیکھنے پہنچے۔

پریڈ دیکھنے آنے والوں میں نوجوان، بزرگ، بچے اورخواتین شامل تھیں۔ پریڈ شروع ہونے سے پہلے ہی پاکستانی اسٹیڈیم شہریوں سے بھرگیا لیکن دوسری طرف بھارتی اسٹیڈیم کا بڑاحصہ خالی نظرآیا پریڈ کے دوران پاکستان رینجرزپنجاب کے جوانوں کا جذبہ کی قابل دید تھا۔ آج ہونیوالی پریڈ معمول سے مختلف نظرآرہی تھی، پاکستانی جوانوں کا ہاتھوں، چہرے اورآنکھوں کے اشارے سے دشمن کے جوانوں کو منہ توڑجواب دیکھ کرواہگہ بارڈرکی فضائیں نعرہ تکبیر اللہ اکبر اورپاکستان زندہ بادکے نعروں سے گونجتی رہیں۔
خواتین، بچے اوربزرگ ڈھول کی تھاپ پرنعرے لگاتے اورپاکستان رینجرزپنجاب کے جوانوں کا حوصلہ بڑھاتے رہے پریڈ دیکھنے آنیوالے شہریوں کا کہنا تھا وہ آج بھارت کویہ دکھانے آئے ہیں کہ پاکستانی تمھارے حملے کے جھوٹے دعوؤں سے ڈرنے والے نہیں ہیں۔ پاکستان کا بچہ بچہ وطن کے دفاع کے لئے تیارہے۔

لاہورکے علاقہ ماڈل ٹاؤن سے آنیوالی خواتین نے کہا وہ آج پاکستان رینجرزپنجاب کے جوانوں کا حوصلہ بڑھانے آئے ہیں۔ پوری پاکستانی قوم اپنی فوج اوررینجرزکے ساتھ کھڑی ہے۔ یہاں آنیوالے جوانوں اوربزرگوں نے کہا حکومت اجازت دے توچند منٹوں میں بھارت کومزاچکھادیں گے۔
واہگہ اٹاری بارڈرپردونوں سرحدی فورسزطے شدہ قواعد کے تحت مشترکہ پریڈ کرتی ہیں، اس دوران دونوں طرف پریڈ دیکھنے آنے والے شہریوں کو اشتعال انگیزاورایک دوسرے ملک کے خلاف نعرے لگانے کی اجازت نہیں دی جاتی ہے۔ دونوں ملکوں میں حالات کے اتارچڑھاؤ کا اثر پریڈ میں شریک جوانوں پربھی پڑتا ہے۔

2 تبصرے “واہگہ بارڈر، پریڈ دیکھنے آنے والے پاکستانیوں کا جوش وجذبہ عروج پر

اپنا تبصرہ بھیجیں